Choose Your Concern.

969
.

 

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


آپ کی تشویش بجا

احمد جواد

میں سب لوگوں کی طرف سے ظاہرکی گئی ہر قسم کی تشویش کی قدر کرتا ہوں۔اس لئے میں ڈان لیکس کے مسئلے  اور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر کی مشہور زمانہ ٹویٹ پر ہر زاوئے سے ظاہر کی گئی تشویش کی قدر کرتا ہوں۔

فی الحال اظہار خیال  کی ذیل میں دو طرح کےخدشات کا اظہار کیا گیا ہےـ

   ایک- سچ کا انتخاب جسے نہ صرف چھپایا جاتا رہا بلکہ وزیراعظم کی جانب سے گمراہ بھی کیا  جاتا رہا اور اس ٹویٹ سے اس کا محض ایک اشارہ ملتا ہے۔ سوال یہ ہے کہ پچھلے چار ہفتوں سے وزیر اعظم کی طرف سے ڈان لیکس کی رپورٹ کو کیوں قوم سے چھپایا جار ہا ہے؟ ٹویٹ سے وہ اگرخجالت محسوس کر رہے ہیں تو رپورٹ کو منظر عام پر کیوں نہیں لے آتے؟

  دو- ایوان وزیراعظم کا ایک ماتحت محکمے نے ستیاناس کر دیا ہے۔ کسی محکمے کو اس قدر   جراٗت نہیں ہونی چاہئے کہ ایک ٹویٹ جیسے کھلم کھلےفورم  سےوزیر اعظم کے خط کو رد کردے۔

ہم میں سے ہر ایک کو حق پہنچتا ہے کہ ان دونوں  خدشات میں سے کسی ایک کا انتخاب کر سکے۔میں تو سچ کے ظاہر کرنے کے حق میں ہوں جس کے ہم عادی نہیں رہے۔میں سچ کا چناؤ اس لئے کرتا ہوں کیونکہ میں پانامہ معاملے میں وزیراعظم کو کرپٹ سمجھتا ہوں جو اپنا اعتبار کھو چکے ہیں۔میں اس چناؤ کے حق میں اس لئے ہوں کیونکہ مجھے یقین ہے کہ وزیر اعظم  ڈان لیکس پر مشرکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ میں سے اپنی بیٹی کو بچانے کی کو شش کر رہے ہیں۔میرا ایمان ہے کہ    قوم کو رپورٹ کے مندرجات جاننے کا پورا حق ہے مگر وزیراعظم قوم سے رپورٹ کو  چھپا رہے ہیں۔میں ایمانداری سے سمجھتا ہوں کہ وزیراعظم سچ کی راہ میں رکاوٹ بنے ہوئے ہیں اسی لئے ایک ماتحت محکمے کو وزیراعظم کی حقانیت کو چیلنج کرنے کی جرات ہوئی۔میں سچ کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں اور ٹویٹ پر داد دیتا ہوں۔میں آئندہ بھی سچ کا متلاشی رہوں گا کیونکہ ماضی میں ہم  کوبہت کم سچ سننے کو ملا ہے۔سچائی کی کھوج کے لئے کسی کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہئے بلکہ فوج، عدلیہ اور سول حکومتوں سمیت ہر ادارے کو جوابدہ ہونا چاہئے۔


Choose Your Concern.

Ahmad Jawad

Every concern from everybody should be respected, so I respect all concerns from all angles on the issue of Dawn Leaks and famous Tweet by DG ISPR.

Currently, opinion is divided between following two concerns:

1. Choosing a truth which was and is being concealed and even misled by PM and only a hint has been disclosed through a tweet. Why a PM is hiding truth from nation by concealing Dawn Leaks report since 4 weeks? Why PM could not reveal the report even after being embarrassed by a tweet?

2. PM office has been undermined by a subordinate department. No subordinate department or official should dare rejecting PM letter through open forums like tweet.

Each one of us has the choice to choose between above two concerns. I choose “revelation of truth” which we are no more used to. I choose “Truth” because I believe PM is corrupt and his credibility is long gone after Panama. I believe in this choice because I believe PM is trying to save his daughter from JIT report of Dawn Leaks. I believe PM is concealing the report from nation, which nation has full right to know. I believe PM is obstruction to truth and one subordinate department dared to challenge his doubtful integrity. I salute to truth, I salute to tweet, I look forward more truth in future because we had so little in the past history. Truth should not be discriminatory,it should be accountable for every institution including Military and Judiciary besides civil governments.