How a country becomes first world from Third world.

240

 

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


کوئی ملک تیسری دنیا سے اوّل درجے کی صف میں کیسے شامل ہوا؟

احمد جواد

کسی ملک میں جب اسحاق ڈار جیسے وزیر خزانہ اور سعید احمد جیسے سٹیٹ بینک کے ڈپٹی گورنر ہوں گے یقیناًوہ ملک منی لانڈرنگ کے درجہ کمال کو تو پہنچ جائے گا مگر اُس ملک میں دنیا کے بہترین مالیاتی ادارے نہیں بنیں گے۔

سنگا پور کی ایک مثال پیش خدمت ہے۔1968ء میں سنگا پور میں مانیٹری اتھارٹی آف سنگاپور کا قیام عمل میں آیا۔سنگا پور کے بانی لی کو آن نے فیصلہ کیا کہ سٹیٹ بینک آف پاکستان جیسا مرکزی بینک ہر گز قائم نہیں کیا جائے گا جس کا کام بس نوٹ چھاپنا ہو۔اس کے برعکس فیصلہ ہوا کہ مانیٹری اتھارٹی آف سنگاپور اتنے ہی نوٹ چھاپے گی جتنا زر مبادلہ سنگا پور میں دستیاب ہوگا۔اس کا یہ فائدہ ہوا کہ سنگاپور کی تاریخ میں اس کا ڈالر ہمیشہ مستحکم رہا۔

جب 1972ء میں ایک معتبر برطانوی سرمایہ کار نے سنگاپور میں شیئروں کے کاروبار کو اپنی حسب منشا چلانے کی کوشش کی اس وقت سنگاپور جیسے ایک نوزائدہ ملک کے لئے لندن سٹاک ایکسچینج جیسے بڑے مالیاتی ادارے کے خلاف تحقیقات کا فیصلہ کرنے کا مرحلہ بہت مشکل تھا۔تاہم لی کوآن نے مالیاتی ادارے کی بےقاعدگی پر سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کیا تاکہ مالیاتی حساب کتاب درست رکھنے کا رجحان جاری رکھا جائے۔چنانچہ لندن کے سرمایہ کار کے خلاف مقدمہ چلایا گیا اور اسے لندن بدر کرکے سنگا پور بھجوایا گیا۔

جس ملک پر جرائم پیشہ اور منی لانڈرنگ کرنے والے لوگ حکمران ہوںوہ ملک عزت اور وقار کے راستے کی بجائے تباہی کے راستے پر گامزن ہوتا ہے۔ہمیں صرف اداروں کی تشکیل نو اور اپنی ترجیحات کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔سٹیٹ بینک آف پاکستان وہ ادارہ ہے جس کی  سب سے پہلے بڑے پیمانے پرتشکیل نو کی اشد ضرورت ہے۔ اگر آپ کی جیب کے سوراخوں سے پیسہ چھن چھن کر مختلف مقامات کا رُخ کرتا رہے گا تو آپ کی جیب ہمیشہ خالی ہی رہے گی چاہے آپ کے ہاتھوں میں سی پیک ہو یا دنیا جہان کی دولت موجود ہو۔لی کو آن نے کہا تھا کہ ہمارے مالیاتی ادارے کی بنیاد قانون کی بالادستی، آزاد عدلیہ ، اہل ،مستحکم اور ایماندار حکومت پر رکھی گئی ہے۔

سنگاپور کے مالیاتی ادارے کی یہی مضبوطی تھی جس کی وجہ سے یہ پہلا ملک تھا جس نے بی سی سی آئی کو بین الاقوامی ساکھ کے باوجود اُسے سنگا پور میں لائسنس دینے سے انکار کر دیا تھا۔انجام کار جب بی سی سی آئی ڈوب گیا تو اس سانحے سے دنیا بھر کو لگنے والے مایاتی زخموں سے سنگا پور محفوظ رہا۔


How a country becomes first world from Third world.

By Ahmad Jawad

For sure, countries with Finance Minister like Ishaq Dar and Dy Governor State bank like Saeed Ahmad can excel in money laundering but not in creating world class financial institutions.

Here is a recipe from Singapore. Singapore established Monetary Authority of Singapore (MAS) in 1968. Founder of Singapore Lee Kuan decided not to have central bank like state bank of Pakistan whose job is to print and issue currency.Instead MAS was established who would only print and issue singapore currency only when equivalent of foreign exchange is available in the country. This allowed Singapore dollar to remain stable throughout its history.

When Jim slater, most credible British investor in 1972, tried to manipulate the shares in Singapore, it was a difficult decision to investigate against the top ranking financial institution of London Stock Exchange by a new born country, yet Lee Kuan decided to take tough action against financial irregularity to set the trend of strict financial discipline, London investor was tried and extradited to singapore from London.

Country cannot be led by money launderers & criminals to path of glory but a path of destruction. If we love glory, we need to improve our choices, we need to restructure our institutions. State Bank of Pakistan should be the first institution which needs massive restructuring. If your pocket has a hole to unknown destinations, pocket will remain empty no matter you have CPEC or any wealth in the world.

Lee Kuan said ” The foundations for our financial centre were the rule of law, an independent judiciary and a stable, competent and honest government.

Such was the strength of Singapore Financial authority that it was the only country in the world which refused License to BCCI despite Its strong global influence. When finally BCCI collapsed, Singapore was unscathed from this disaster while rest of the world suffered.

Facebook Comments