A General Request: Like I always say: Social Media is not result of evolution, it’s a happening….

410

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ” Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/. can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


ہمیشہ کی طرح ایک عرض تمنا  ۔ ۔ ۔

سوشل میڈیا ارتقاءنہیں ،امر واقع ہے

احمد جواد

اس لئے ہم اسے سیکھ بھی رہے ہیں اوراس سے مانوس بھی ہو رہے ہیں۔جب ہم کوئی پیغام واٹس ایپ پرارسال کرتے ہیں تو تمام احباب کسی نئی بات کی امید میں اسے کھولتے ہیں۔تمام تر پیغامات کو پڑھنا بڑا جوکھم کا کام ہے یہی وجہ ہے کہ بہت سے لوگ گروپ میں شامل ہونے سے گریز کرتے ہیں۔

میری ناچیز رائے میں صبح بخیر جیسے فضول پیغامات سے احتراز کرنا چاہئے اور درپیش مسائل کو موضوع پیغام بنانا چاہئے جن سے علم، تبادلہ خیال اور آگاہی میں اضافہ ہوتا ہے۔بسا اوقات کوئی پیغام تمام تر لوازمات کے ساتھ لسٹ میں شامل تمام احباب کو بھیج دیا جاتا ہے۔ہم جیسے ہی کسی دوست کی طرف سے آنے والے  توجہ طلب پیغامات کی فہرست کو بے تابی سے کھولتےہیں تووہاں صبح بخیر لکھا ہوا پاتے ہیں۔کسی کو صبح بخیر کا پیغام بھیجنے میں کوئی حرج نہیں مگر اس طرح کے پیغامات کا سیلاب آجائے تو ان کو پڑھنا اور ان کا جواب ارسال کرنا نا ممکن ہو جاتا ہے۔اگر ہم پیغامات کے انتخاب میں خوش ذوقی کا مظاہرہ کریں تو پیغامات کے سیلاب میں کمی آنے کے ساتھ ساتھ ہم اہم اور معلوماتی پیغامات پر توجہ مرکوز کر سکیں گے۔

پیغام آپ کے دروازے پر ایک دستک کی مانند ہوتا ہے۔آپ دروازہ کھولیں اور وہاں کچھ بھی قابل ذکر نہ ہوتو یہ آپ کی روزمرہ زندگی پر بوجھ بن جائے گا۔پیغامات کے بہتر انتخاب سے حقیقی مسائل پر توجہ دینے میں بہت مدد ملے گی ورنہ ہم یا تو پیغامات کے سیلاب میں بہہ جائیں گے یا اس سے کنارہ کش ہو جائیں گے۔اس سے بہتر ہے کہ ہم مہارت اور خوش ذوقی کا مظاہرہ کرنا سیکھ کر اپنی اور دوسروں کی مدد کریں۔


 

A General Request: Like I always say: Social Media is not result of evolution, it’s a happening….

By Ahmad Jawad

So we all are learning and adapting with its use. Every time we send a message, all members receive it with sign of new message. It creates a mammoth work to read all of them. That is the reason that a lot of people run away from groups.

In my humble opinion, messages like good morning or other insignificant messages can be avoided, instead issue based messages can be posted which can create knowledge, opinions, awareness. Some people write a message and send it through all broadcast option which sends that message to every person in the contact list. When we see a pending message with a name, we immediately open it hoping there might be something important and we find “Subah Bakhair”. There is nothing wrong in Subah Bakhair but ease of messages and free of charge messages on social media has created a huge flood of messages and making it almost impossible to read and address everyone. If we start some discretion in selection of message, we can reduce the flood of messages and might as well focus on important information and messages.

A message is like a knock on the door and when you open the door and finds nothing significant, it just creates extra load to handle in daily life.

Good selection of messages will also help in focussing on real issues .

At some point of time, we will be either sink in flood of messages or run away. It’s better to learn discretion and skills to help ourselves and help others.

Facebook Comments