Hum Zinda Quom Hein.

17

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


ہم زندہ قوم ہیں

احمد جواد

سنگا پور میں ایک سفارت کارگاڑی کی ٹکر مار کر ا اوریک شخص کوہلاک کرکے بھاگ جاتا ہے مگر پکٹر کر جیل بھیج دیا جاتا ہے۔

پاکستان میں ایک سفارت کارگاڑی کی ٹکر سے ایک بندہ مار کر بھاگ جاتا ہے مگر اس کی حرکت پر صرف احتجاج کیا جاتا ہے۔

یہ رومانیہ کے ایک سفارت کار کا واقعہ ہے جو 15دسمبر 2009 کو سنگا پور میں اس وقت پیش آیا جب تین راہ گیر وں سے ایک گاڑی سنگاپور کے نواحی علاقہ بوکیت پانجانگ میں ٹکرائی اور بھاگ نکلی۔ بعد میں معلوم ہوا کہ گاڑی کو اس وقت سفارت خانہ میں تعینات سفارت کا ڈاکڑ سلویو لونیسکو چلا رہے تھے۔ علی الصبح تقریباً تین بجےاس گاڑی نے دو سرخ ٹریفک اشاروں کی خلاف ورزی کی اور پیدل کراسنگ پر راہ گیروں سے جا ٹکرائی۔ ایک شخص موقع پر مارا گیا جبکہ دو زخمی ہو گئے۔ واقعے کے تقریباً چالیس منٹ کے بعد لونیسکو نے گاڑی چوری ہونے کی رپورٹ درج کرائی۔ حادثے کے چار گھنٹے بعد واقعے میں ملوث کار ڈھونڈ نکالی گئی۔

واقعے کے فوراً بعد سنگا پور میں تحقیقات شروع کر دی گئیں۔ رومانیہ کے حکام نے بھی اپنی طرف سے واقعے کی تفتیش شروع کر دی۔ سنگا پور کی تحقیقی ٹیم نے ثابت کیا کہ گاڑی چوری نہیں ہوئی تھی اور حادثہ کے وقت لو نیسکو گاڑی چلارہے تھے۔ وہ حادثہ کے تین دن بعد سنگاپور سے چلے گئے تھے مگر انہوں نے واپس سنگاپور آگر تحقیقات میں پیش ہونے کا فیصلہ کرلیا۔ رومانیہ نے خود بھی لونیسکو کو ملک بدر کرانے سے منع گر دیا۔

سنگا پور کے شدید دباؤ پر بالآخر رومانیہ کے حکام نے لونیسکو کو مئی 2010ء میں بندہ مارنے،زخمیوں کو نظر انداز کرنے اور موقع واردات سے فرار ہونے کے جرم میں تین سال قید کا حکم سنایا۔فروری 2014ء کے آتے آتے لونیسکو نے کورٹ آف اپیل میں سزا کے خلاف اپیل کردی جس نےصحت جرم کو برقرار رکھتے ہوئے قید کی سزا کو تین سال سے بڑھا کر چھ سال کر دیا۔

ابھی کل ہی کے دن 7اپریل 2018ء کو اسلام آباد میں ایک امریکی سفارت کار نے ٹریفک کے سرخ اشارے کی خلاف ورزی کی اور ایک موٹر سائیکل سوارکو مار دیا جبکہ دوسرا سوار زخمی ہو گیا۔ اس واقعہ پر پاکستان کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔یہ احتجاج بالکل ویسا ہی ہے جس قسم کے احتجاج زرداری اور کیانی دور میں پاکستان کی جانب سے کئے گئے۔یہ ویسا ہی احتجاج تھا جو امریکہ کے ایجنٹ اور اجرتی قاتل ریمنڈ ڈیوس کے ہاتھوں دو افراد کے دن دہاڑے قتل پر کیاگیا۔

ہم زندہ قوم ہیں ۔ امریکہ اور مغرب کی طرف سے ہماری ہر بے عزتی اور ہزیمت پر ہمیں درس دیا جاتا ہے کہ بطور پاکستانی مثبت نقطہ نظر اپناؤ۔

ہمارے وزیر اعظم کو امریکہ میں ننگا کیا گیا تو انہوں نے دلیل دی کہ میں امریکی قوانین کی پاسداری کرتا ہوں۔ مگر ان کا خیال ہے کہ پاکستان میں امریکیوں کے لئے کوئی قانونی قدغن نہیں۔

میری قوم جاگو، شریف، زرداری، جنرل کیانی، حقانی، ڈاکٹر شکیل آفریدی اورالطاف حسین ہماری قسمت کے مالک بن بیٹھے ہیں جن کو ہم نے اپنی گردنوں پر سوار کیا ہواہے۔میں ان کو دوش نہیں دیتا کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ انسان کی یاداشت کمزور، پاکستانیوں کا حافظہ کمزور تر اور پنجابیوں کی یاد رکھنے کی صلاحیت کمزور ترین ہے۔

پیارے پاکستانیو اپنی تاریخ کا مطالعہ کرو، دوسروں کی عزت ،عظمت اور شہرت کی تاریخ ملاحظہ کرو اور معلوم کرو کہ قومیں کس طرح تباہ ہوتی ہیں اور کس طرح تعمیر ہوتی ہیں۔


A diplomat hit, kill & run in Singapore gets sentenced.

A diplomat hit, kill & run in Pakistan gets strong protest only.


By Ahmad Jawad

The Romanian diplomat incident occurred on 15 December 2009 in Singapore, when three pedestrians were struck in a hit and run in the Singapore suburb of Bukit Panjang. It was later identified as being driven by Dr Silviu Ionescu, at the time Ambassador of the Romanian Embassy in Singapore. At approximately 3 am, the vehicle ran two red lights and hit the pedestrians on a pedestrian crossing, injuring two and killing one.Approximately 40 minutes after the incident, Ionescu reported the vehicle as being stolen.The car was later found abandoned approximately 4 hours after the collisions.

Singapore immediately began an investigation into the incident.Romanian authorities also commenced an investigation into the incident.A Singapore inquiry determined the vehicle had not been stolen and was being driven by Ionescu at the time of the incident.Ionescu, who had left Singapore three days after the incident, declined to return to Singapore for the proceedings.Romania also declined several requests to extradite Ionescu.

Under strong pressure by Singapore, finally Ionescu was arrested by Romanian authorities in May 2010 and he was sentenced to 3 years’ jail after being found guilty of manslaughter, negligent bodily injury and leaving the scene of a crash. Ionescu appealed, with the result arriving in February 2014, with the Court of Appeal upholding his conviction and doubling his sentence from 3 years to 6 years.

Yesterday, on 7 April, 2018, An American diplomat has violated traffic signal and killed a motorcyclist and injuring other. A strong protest has been lodged by Pakistan. This protest is similar to protests lodged by Pakistan against America during Zardari & Kayani time. It is similar to protest when Raymond Davis an American hired agent & assassin shot two Pakistanis in broad day light.

Hum Zinda Quom Hein, be positive, be Pakistani is our message on every dishonour & disgrace we suffer in the hands of American or West.

Our PM get stripped at American airport and justify he respects American law. But same PM thinks there is no law for Americans in Pakistan.

Wake up Nation. Sharifs, Zardari, General Kayani, Haqqani, Dr Shakil Afridi, Altaf Hussain are reflection of our destiny we have selected ourselves. I don’t blame them because they know “ Human memory is short, Pakistani’s memory is shorter, and Punjabi’s memory is shortest.

Dear Pakistanis, please read our history, read others history to learn glory & honour, to learn how Nation’s are destroyed, how nations are built.

Facebook Comments