Javed Chaudhry’s Warning or Agenda.

74

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


جاوید چوہدری کی وارننگ یا ایجنڈا

احمد جواد

جاوید چوہدری نے پیش گوئی کی ہے کہ ریحام خان کی کتاب عمران خان کی شہرت کو شدید نقصان پہنچائے گی۔جاوید چوہدری کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ اس کتاب کی اشاعت کی معاونت شریف خاندان نہیں بلکہ بھارت کا ایک بزنس مین کر رہا ہے۔

جاوید چوہدری کی قبیل کے روائتی صحافیوں کو اپنی آواز کو مقبول عام بنانے کے لئے اورہر مسئلے کو سنسنی خیز بنانے کے لئے قیامت کا منظرنامہ تخلیق کرنا پڑتا ہے۔

روائتی صحافیوں کا ذاتی فوائد کیے حصول کے لئے کوئی نہ کوئی ایجنڈاضرور ہوتا ہے۔ زیر نظر مضمون میں جاوید چوہدری کاایجنڈا یہ ہے کہ اس مبیّنہ کتاب کی اشاعت میں شریف خاندان کے ملوث ہونے کا تاثر زائل کرنے کے لئے اس کا رخ کسی گمنام بھارتی تاجر کی طرف موڑ دیا جائے۔جاوید چوہدری سے یہ بنیادی سوال پوچھنا ہے کہ اس کتاب کی اشاعت سے حقیقی طور پر کون مستفید ہوگا؟ اس کا سیدھا سادا جواب ہے کہ شریف خاندان۔ کیا اس کتاب کی اشاعت کے اصل محرک بھی وہی ہیں؟حنیف عباسی نے 2017ء میں وارننگ دی تھی کہ ریحام خان کی 2018ء میں آنے والی کتاب کی آمد پر سنگین نتائج برآمد ہونے۔ یہ بڑھک انہوں نے علم نجوم میں اپنی مہارت کے زور پر نہیں ماری تھی بلکہ اس کا ماخذ وہ اطلاع تھی جو ریحام خان سمیت شریف خاندان کی ٹیم کی طرف سے براہ راست حنیف عباسی کو فراہم کی گئی تھی۔

ہاں اگر اس پراجیکٹ میں سرمایہ کاری کاسراغ کسی بھارتی عنصر کی نشاندہی کرتا ہے تو اس سے ایک بار پھر یہ ثابت ہوتا ہے کہ شریف خاندان کا پنڈ چھڑانے کے لئے بھارت مدد کر رہا ہے۔

جاوید چوہدری ان پہلوؤوں کو زیر بحث لانے سے دامن بچاگئے۔ تاہم جاوید چوہدری آپ نے بہت خوب شوگر کوٹڈ خفیہ ایجنڈا پیش کیا۔ آپ نے مال بیچنے کا گرُ G6میں واقع ملک ریاض کےگھر کے بیڈ روم سے سیکھا تھا اور اُس وقت سے آپ کا یہ دھندا خوب چل رہا ہے۔

اگر جاوید چوہدری کی بات پر یقین کر لیا جائے تو عمران خان مدتوں پہلے سیتا وائٹ کے ہاتھوں برباد ہوچکے ہوتے۔

میں نہیں سمجھتا کہ یہ کتاب میڈیا اور عوام کا تھوڑا سادل پشوری کرنے کے علاوہ آنے والے انتخابات پر زیادہ اثر انداز ہوگی۔

عمران خان اپنے پختہ عزم کی بدولت ان چھوٹی موٹی آخری آزمائشوں میں سے با آسانی گذر جائیں گے۔

ریحام خان کی اونچی خواہشات کے حصول میں اس کی ذہانت آڑے آجاتی ہے اسی لئے ٹشو پیپر کی طرح استعمال ہونا اس کا مقدر ہے اور وہ بھی باتھ روم کا ٹشو پیپر۔

خفیہ ایجنسی MI6 اُس کو بھرتی کرنے پر پچھتا رہی ہے۔ ایک دن راء اور شریف خاندان بھی پچھتائیں گے۔

میں اس خاتون کے بارے یہی کہہ سکتا ہوں حسنِ آرائش کی آڑ میں خوبصورتی اورخود ساختہ ما فی الضمیر ۔


Javed Chaudhry’s Warning or Agenda.

By Ahmad Jawad

Javed Chaudhari has predicted that Reham Khan book will inflict serious damage to Imran Khan’s reputation. Javed Chaudhry also claims that it was not sponsored by Sharifs but an Indian businessman.

Traditional journalists like Javed Chaudhry have to create a dooms day scenario on every issue to reflect required sensationalism to make their voice popular.

Traditional journalist always carry some agenda as well for vested interests. Agenda in his recent article is to dispel the impression of Sharifs involvement in the book and turns it towards an unknown Indian businessman. A very basic question from Javed Ch:“ who is the real beneficiary of this book”? answer obviously is Sharifs. So who has got the real motive to sponsor such book? Hanif Abbasi statement in 2017 to warn dire consequences of Reham Khan book in 2018 is obviously not result of some horoscopist ability but an information directly coming from the Sharifs team including Reham Khan.

Yes investment foot prints might lead towards some Indian element. In that case, it is proved yet again that how India is trying to rescue Sharifs.

Javed Ch avoided to discuss all these aspects. Finally well done Javed Ch for a package of sweet with hidden agenda. You learnt how to sell from the drawing room of Malik Riaz House in G6 Islamabad, and you are selling well since that time.

If Javed Chaudhry is to be believed, Imran Khan would have destroyed long time ago in the hands of Sita White.

I don’t think book will have any impact in coming elections except momentary heat & flirtation of public & Media with the book.

Imran Khan’s steadfastness will sail through,yet again, this last minute distractions.

Reham Khan IQ is biggest hurdle to her high ambitions. She always ends up like a Tissue paper & more precisely a toilet paper.

MI 6 still regretting to recruit her. RAW & Sharifs will regret too. I will describe her as follows:

“Beauty under good Make up and Content under good made up”. 😀

Facebook Comments