Simple Questions, Simple Answers,Simple People and Crook PMLN Media Cell:

848
.

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


سادہ لوح عوام اور پاکستان مسلم لیگ(نواز) کا مکار میڈیا سیل

آسان سوال  ،آسان جواب

احمد جواد

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ کے ذریعے پاکستان مسلم لیگ(نواز) کا میڈیا سیل ایک بار پھر لوگوں کو بیوقو ف بنانے میں مصروف ہے۔اس پوسٹ میں اعداد و شمار سے یہ ثابت کرنے کی کوشش کی گئی ہے کہ دنیا کےامیر ترین ممالک فی کس قرض کے حساب سے پاکستان کے مقابلے میں کہیں زیادہ مقروض ہیں۔مثال دی گئی کہ ایک جاپانی فرد فی کس قرض کے حساب سے ایک پاکستانی کے مقابلے میں کتنا زیادہ مقروض ہے۔اس پوسٹ سے یہ تاثر زائل کرنا مقصود تھا کہ پاکستان کی تاریخ میں پاکستان مسلم لیگ(نواز) کے دور میں لئے جانے والے زیادہ قرضوں میں کوئی قباحت نہیں۔

آئیے ہم اپنی معمول کی زندگی میں سے چند مثالیں لیتے ہیں

ایک صنعتی ادارہ جب لاکھوں کروڑوں روپے کا قرض لے کر نہ صرف منافع کماتا ہے بلکہ ترقی بھی کرتا ہے۔اِس سے اس ادارے کی قرض واپس ادا کرنے کی صلاحیت کا اظہار بھی ہوتا ہے۔

بارہ ہزار روپے کمانے والا ایک مزدور اگر پچاس ہزار روپے کا قرض بھی لیتا ہے تو وہ اپنی محدود آمدنی سے ساری عمر یہ قرض نہیں چکا سکتا۔اس کی وجہ یہ ہے کہ اُس نےوہ سارا قرضہ خاندان کےکسی بیمار فرد کی صحتیابی پر یا مسمار ہوتے گھر کی مرمت پر لگا دینا ہے۔ اس طرح بڑھتا ہوا قرض اس کی آمدنی کا توازن تلپٹ کرکے رکھ دے گا۔

قرض دینے کا طریقہ کار بھی یہی ہے کہ پہلے مقروض کی قرضہ واپس کرنے کی صلاحیت کا اندازہ لگایا جاتا ہے۔قرض کی رقم جس منصوبے کے لئے لی جاتی ہے اس کے منافع بخش ہونے کا اطمینان کیا جاتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ بڑے بڑے سیٹھ قرضے بھی لیتے ہیں اور ترقی بھی کرتے ہیں۔ اس کے برعکس غریب محنت کش چند ہزار روپے کا قرض چکانے کی تگ و دو میں لگے رہتے ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ(نواز) کا میڈیا سیل احسن اقبال اور اسحاق ڈار جیسے دھوکہ بازوں کی طرح مثالوں کا سہارا لے کر لوگوں کو اس لئے گمراہ کرتے ہیں کیونکہ اُن کی دانست میں لوگوں میں شعور بہت کم ہے  اس طرح ان کو با آسانی بیوقوف بنایا جا سکتا ہے۔لیکن میرا خیال ہے کہ قوم ان کی چالبازیوں سے بخوبی واقف ہے۔

سنگا پور، جاپان اور جنوبی کوریا پر بیرونی قرضوں کا بوجھ پاکستان سے کہیں زیادہ ہوگا۔مگر اُن کی مثال اُس صنعت کی مانند ہے جو اربوں ڈالر کا قرض لے کر اس کو لمبے عرصے تک منافع میں تبدیل کرتے رہتے ہیں۔

پاکستان کی مثال اس کم معاوضہ لینے والے مزدور جیسی ہے جس کو کچن کا خرچہ چلانے، آفات کا مقابلہ کرنے حتٰی کہ قرضہ اتارنے کے لئے بھی قرض لینے کی ضرورت پڑتی ہے۔

سادہ لفظوں میں پاکستان مسلم لیگ(نواز)کا میڈیا سیل احسن اقبال کی طرح روائتی طور پر احمقانہ اور گمراہ کن تاثر دے رہا ہے کہ ایک مزدور بہتر ہے جس پر قرض کا بوجھ اس صنعتی ادارے سے کہیں کم ہے جس پر اربوں ڈالر کا قرض واجب الادا ہے۔حالانکہ یہ بتانے کی چنداں ضرورت نہیں کہ وہ صنعت اربوں ڈالرقرض کی نفع بخش منصوبوں میں سرمایہ کاری کر کے اپنی آمدنی سے دوگنا تگنا منافع کمائے گی۔

میری قوم کو جاگنے کی ضرورت ہے  جو محض اس لئے پسماندہ رہ گئی کیونکہ اس کے قائدین ستر برس سے اُسے بیوقوف بنانے میں مصروف ہیں۔

آپ اپنے ارد گرد موجود پٹوایوں کو شناخت کریں اور انہیں اس طرح شرمندگی کا احساس دلائیں جیسے سوشل میڈیا پر مجرموں کا بائیکاٹ کر کے احساس دلایا جاتا ہے۔پٹواری بھی مجرم ہیں کیونکہ وہ اپنے لیڈروں کی  کرپشن میں یا تو حصہ دار ہیں  یا ان کی کرپشن کا دفاع کرنے کے مجرم ہیں۔


Simple Questions, Simple Answers,Simple People and Crook PMLN Media Cell:

By Ahmad Jawad

A social media post from PMLN Media Cell is again trying to fool the nation. Subject Post presents statistics that how richest countries of the world are under more debt than Pakistan (in terms of population) How one Japanese is under more debt than a Pakistani. Objective is to dispel the perception that PMLN largest debt acquisition in the history of Pakistan in its 5 years term is not of any grave concern.

Let’s take a few examples from our routine life.

An industry can take millions & billions of loan and not only sustain profitability and growth rather demonstrate trust and ability to return the loan.

A labour will not be able to pay back a loan of Rs 50,000 in his entire life with his unstable income of Rs 12000 per month. In addition, he won’t be able to convert the loan into any profitability since his loan most likely will be required to meet some firefighting like sickness/hospital bill of his family member or repair of his hut in shambles. He will continue to increase his loan and lose balance with his income.

Loan is measured in the capacity and ability of conversion into profitability and safe return. That is why an industrialist is under billions of loan, yet progressing. On the other hand, a labour is under few thousands of loan and yet struggling.

PMLN Media cell and crooks like Ahsan Iqbal & Ishaq Dar use such examples to fool the nation knowing overall awareness level of this nation is very low and they can be fooled easily but I think nation has strayed to learn their tactics.

Singapore or Japan or South Korea might be under greater debts than Pakistan but these countries are like that industry which is under billions of loan but carry the ability to turn loans into growth, profitability and sustainability.

Pakistan is like that low wage labour who needs loan even to run its kitchen or relief work in a disaster or even to pay back its loan.

In simple words, PMLN Media Cell with typical foolish & misleading concepts from Ahsan Iqbal is trying to tell the nation that a labour is better than a large industry because labour owes just few thousand loan whereas Industry owes billion dollar loan. Needless to mention that industry with billion dollar loan will double & triple its income after investing loan into bigger projects.

Wake up Nation, we are worse because our leaders know how to fool us since 70 years.

Identify Patwaris around you and make them feel ashamed like those criminals who face social boycott from society due to their crimes. Patwaris are criminals because they either share corruption with their corrupt leaders or protect curruption of corrupt leaders.