Missing Sounds of Leadership

1764
.

By Ahmad Jawad


Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ” Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/


We heard Quaid Azam warming the hearts during struggle of freedom.

We heard Ayub Khan inspiring the nation during a war.

We heard Bhutto to create sparks at the time of battle.

We even heard whispers of Zia Ul Haq in the ears of Rajiv Gandhi that could scare a hostile nation.

We heard Raheel Sharif at the time of threats from across the border, it was sound of a lion tearing the ears of enemy.

Today, our very existence is challenged by once a guest at Raiwind, his name is Modi & he is shouting at full pitch to destroy us.

But Raiwind is still silent …..

But today Raiwind will not be silent, another lion will roar to tear apart the enemy. Today Imran Khan will step in the shoes of Quaid Azam, Ayub Khan, Bhutto, Zia Ul Haq & Raheel Sharif to challenge the enemy inside & outside the country.

But few Kilometres from Imran Khan, Raiwind is still silent. The silence is now like a cancer, diagnosed but no cure.


قیادت کی گم شدہ آوازیں

احمد جواد .

ہم نے آزادی کی تحریک کے دوران قائد اعظم کو دلوں کو گرماتے سنا

ہم نے ایوب خان کو جنگ کے دوران قوم کا جذبہ ابھارتے ہوئے سنا

ہم نے جنگ کے وقت بھٹو کو شعلے اگلتے سنا

حتیٰ کہ ہم نے ضیا الحق کو راجیو گاندھی کے کان میں وہ سر گوشی کرتے سنا جس سے دشمن کانپ اٹھے

سرحد پار سے دھمکیاں ملنے پر راحیل شریف کی دشمن کے کانوں کے پردے پھاڑ دینے والی دھاڑ سنی

رائے ونڈ کا ایک دفعہ مہمان بننے والا مودی  بلند ترین آواز میں ہماری بقا کو للکار کرہمیں تباہ کرنے کا اعلان کر رہا ہے

لیکن رائے ونڈ ابھی خاموش ہے

 آج رائے ونڈ خاموش نہیں رہے گا۔ ایک اور شیر دشمن کو ٹکڑے ٹکڑے کر دے گا۔آج عمران خان قائداعظم، ایوب خان، بھٹو، ضیا الحق اور راحیل شریف کی جگہ ملک کے اندر اور ملک کے باہر دشمن کو ہر میدان میں للکارے گا۔

لیکن عمران خان سے چند کلومیٹر پرے رائے ونڈ اب بھی خاموش ہے۔اس وقت خاموشی کینسر کی طرح ہے جس کا کوئی علاج نہیں