Orange is not just in Orange Train, it also appears in dirty & stinking Chadar of a poor and helpless woman.

160

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


نارنجی رنگ صرف اورنج ٹرین سے منسوب نہیں

احمد جواد

نارنجی رنگ صرف اورنج ٹرین سے ہی منسوب نہیں۔ یہ رنگ نادار اور لاچار غریب عورت کی میلی اور متعفن اوڑھنی میں بھی جھلکتا ہے۔میں جانتا ہوں کہ ہم اس طرح کی تصویریں دیکھنا پسند نہیں کرتے۔مگر یہ عورت بھی تو کسی کی بیٹی اور کسی کی ماں ہے۔اُس کا بھی حق ہے کہ وہ بنیادی حقوق اور عزت کے حصول کا دعویٰ کرسکے۔مگرپھر بھی اُس نے ہسپتال کے ننگے فرش پر کسی طبی امداد کے بغیر بچے کو جنم دیا۔مجھے جب اِس تصویر میں نارنجی رنگ  صاف نظر آرہا ہے تو یہ اورنج رنگ  یہاںشہباز شریف کو کیوں نظر نہیں آتا۔کیا اُسے یہ رنگ اُسے صرف اورنج ٹرین میں ہی نظر آتا ہے وہ یہ رنگ غریب عورت کےگندے بدبودار  دوپٹے میں دیکھنے سے کیوں قاصر ہے۔

پاکستان میں بھٹوز، شریفوں، زرداریوں اور لغاریوں کے اقتدار کو چالیس سال ہوگئے مگر پٹواری ذہنیت کویہاں اورنج رنگ دکھائی نہیں دیتا۔مگر وہ مریم نواز کے چہرے پر لگے غازے کے مصنوعی رنگ دیکھنے کے عادی ہیں اور اُ س کےبناوٹی حُسن کی تعریفوں میں مگن رہتے ہیں۔انہیں اُس کی کرپشن، اُس کے گھر سے بھاگنے، اُس کے شاہی خاندان کی دعوے داری سے کوئی غرض نہیں۔ وہ تو بس کتُے کی طرح دُم ہلاتے مریم کے پیچھے پیچھے چلتے رہتے ہیں۔مریم نواز اس معاشرے کی اُن تمام عورتوں کے لئے گالی کے مترادف ہے جو بغیر کسی طبی امداد کے ہسپتال کے فرش پر بچے جنتی ہیں۔وہ ہماری سوسائٹی میں اغوا ہونے والی، بے آبرو ہونے والی، قتل ہونے والی اور بد سلوکی کا شکار ہونے والی عورتوں کے لئے لعنت سے کم نہیں۔شریف خاندان کی بادشاہی میں صرف مریم نواز کو بیٹی، بہن اور ماں ہونے کا حق ہے باقی سب تو لا چار عورتیں ہونے کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہیں۔

اورنج رنگ کی بدبودار چادروں میں لپٹی عورتیں ہماری مائیں، ہماری بہنیں اور ہماری بیٹیاں ہیں۔بس ذرا درد کا احساس کرنے کی ضرورت ہے۔درد کا یہ احساس آپ کو انسان بناتا ہے۔ایک کرپٹ وزیراعظم  کی نااہلی  اور اس کے خاندان کےسیاپے پر محسوس ہونے والی تکلیف آپ کو جانور بنا ڈالےگی۔بہتر ہے انسان بنو، حیوان نہ بنو۔


Orange is not just in Orange Train, it also appears in dirty & stinking Chadar of a poor and helpless woman.

By Ahmad Jawad

I know we don’t want to see such images but this woman is also a daughter & mother, she also has the right to claim dignity & basic rights. She gave birth on the floor of a hospital without ever getting any medical help. I can see some orange colour in this image, why can’t Shahbaz Sharif see this orange colour here. Does he see orange colour only in trains but not in dirty & stinking Chadar of a woman.

This is 40 years of Bhutto’s Sharifs, Zardaris & Lagharis rule of Pakistan. Patwari mindset also cannot see the orange colour here, yes they can see the artificial colours of Make up on the face of Maryum Nawaz and can admire her artificial beauty, her corruption, her runaways, her claim of royalty and follow her like a dog with wagging tail. Maryum Nawaz is a curse on all women in this society who gives birth on the floor of a hospital without medical help, she is a curse on those women who get abducted, raped, killed and maltreated in our society. Only Maryum Nawaz has the right of a daughter & Mother & Sister, others are just helpless women in Sharifs Empire.

Every orange colour in the stinking Chadar of a woman is colour of our mothers, our daughters and our sisters,just feel the pain, this pain makes you human being. Feeling pain on the disqualification of a corrupt PM & accountability of his family makes you animal. Become a human being, not an animal.

Facebook Comments