Pakistan Afghan Policy – Breaking Myths

1509
.

 

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ” Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/. can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


پاک افغان پالیسی  ۔باطل عقیدوں کی شکست و ریخت

احمد جواد

افغانستان اور بنگلہ دیش سے پیوستہ ہماری تمام حماقتوں کا  بھارت بڑی کامیابی سے فائدہ اٹھاتا رہاہے۔بھارت،اسرائیلی اور امریکی گٹھ جوڑ مکمل یکسوئی کے ساتھ پاکستان کو دباؤ میں رکھنے کے لئے کوشاں رہا ہے۔پاکستان کو بھارتی تسلط میں رکھنے کی امریکی کاوش  کے بارےصدر ٹرمپ کے بیان کو ذہن میں رکھیئے۔یہی امریکی پالیسی ہے جو ٹرمپ کے  کھلےخیالات کی آئینہ دار ہے۔چین نے سی پیک کے ذریعےعلاقائی سیاست میں توازن پاکستان کے حق میں منتقل کیا۔

افغانستان پاکستان کے لئے چیلنج اور درد سر بنا رہے گا۔اگر پاکستان کو مستحکم سول اور فوجی قیادت میسر ہوتی توپاک افغان تجارت کی ناکہ بندی کرکے، پاک افغان سرحد پر دیوار کھڑی کرکے،بفر زون بنا کریا پاک افغان بارڈر پر پاکستا ن دوست افغان فوج کی تعیناتی سےافغانستان کو پاکستان کی حمائت پر مائل کیا جا سکتا تھا۔

ماضی میں اس طرح کے اقدامات چین،اسرائیل اور بھارت میں کامیابی سے اٹھائے گئےاور حال ہی میں امریکہ میں صدرٹرمپ کے میکسیکو کے خلاف اور ترک صدرطیب اردگان کے شام کے خلاف دیوار تعمیر کرنے کے اعلانات سے واضح ہے۔اس طرح پاکستان 70سال پرانی مایوس کن اور کمزور سفارتی پالیسی سے چھٹکارہ حاصل کر سکتا ہے۔پاکستان کو بالآخر سمجھنا ہوگا کہ بھینسا پیٹھ ٹھونکنے سے رام نہ ہوتو بہتر ہوگا کہ اس کو سینگوں سےپکڑ کر قابو میں لایا جائے۔

جو پرانی رام لیلاؤں کے پرچارک ان سخت اقدامات کے مخالف ہیں انہیں سمجھانے بجھانے سے مسئلہ واضح ہوگا۔انہیں غور کرنا ہوگا کہ اغیارجن اقدامات سے اس قدر مستفید ہوئےوہ ہمارے لئے سود مند کیونکر نہ ہو گے؟افغانستان کے ساتھ ہمارے 70سالہ تعلقات نے ہمیں قریب قریب تباہی کے دہانے لا کھڑا کیا۔ہمیں ان کے سدھار کی ضرورت ہے ڈھکوسلوں کی نہیں۔

اپنے آپ کو، اپنی فوج کو، اپنی قیادت کویا اپنی آئی ایس آئی کو مورد الزام دینے پر بحث ہو سکتی ہے۔مگر جب تک مسئلے کا حل دریافت نہیں ہوتا یہ بحث فضول رہے گی۔اپنے اداروں کو مستحکم کرنے کےلئے اپنی  غلطیوں اور دوسروں سے سبق سیکھنا ہوگا۔تازہ ترین سبق ہمیں ترکی سے سیکھنا ہوگا جو دہشت گردوں کے گرد شکنجہ کستے شام کے وسط تا جا پہنچا۔اس نے نہ صرف کچھ شامی علاقوں پر قبضہ کیا بلکہ بفر زون قائم کرنے کی غرض سے دوست شامی افواج تعینات کرائیں۔یہی حکمت عملی ایران نے اپنائی۔یہ آزمودہ نسخہ ڈگمگاتی افغان حکومت کے لئے اکسیر ہوگا۔

ٹرمپ کی میکسیکو کے بارڈر کے ساتھ دیوار تعمیر کرنے پر حوصلہ شکنی کی گئی مگر وہ ثابت قدم رہا اور جلد دیوار کی تعمیر شروع ہو جائے گی۔مضبوط قوت ارادی اور عزم کے ساتھ باطل عقیدے پاش پاش کر دئے گئے۔بیرونی خطرات سے بپٹنے کے لئے ہماری اپنی تاریخ میں غزوہ خندق کی شاندار مثال موجود ہے۔

ہمارے روائتی اذہان میں جاگزین باطل عقیدےکئی بار ہمارے سامنے دم توڑ گئے۔صدیوںا سے پولیس اور فوج کے بغیر فاٹا چلایا جا رہا تھا۔اب فاٹا میں قائم کی جانے والی چھاؤنیوں سے یہ دیو مالائی ریت ختم ہو گئی ہے۔اب ایک علیحدہ صوبہ بننے یا خیبر پختونخوا میں ضم ہونے سے فاٹا میں ملک بھر کی مانند قوانین کا نفاذ ہوگا۔

صاف ستھری اور مضبوط قوت ارادی کی بدولت ہم کو اوہام اور باطل عقائد سے آگےدنیا دیکھنے میں مدد ملی۔یہ بد قسمتی تھی کہ نہ قوم میں اور نہ قیادت میں اتنی جرات تھی کہ فرضی قصّوں سے نجات پا سکتے۔

ایمانداری کی با ت یہ کہ ہمیں باطل رویوّں اورپاک افغان پالیسی میں پنہاں ڈھونگ کو مات دینے  کے لئے ٹرمپ کی مدد چاہئے۔


Pakistan Afghan Policy – Breaking Myths

By Ahmad Jawad

India successfully exploited all our follies linked to Afghanistan and Bangladesh at every stage.

India, USA & Israel nexus worked in complete harmony to keep Pakistan under constant pressure. Always remember Trump candid statement to support and engage India to keep Pakistan under control. This is American policy, only to be endorsed by Trump’s open views.

China with CPEC basically shifted the regional balance in favour of Pakistan in regional politics.

Afghanistan will remain a trouble and challenge for Pakistan. Pakistan can easily force Afghanistan to our advantage if ever a strong Pakistani Military & Civilian leadership can take tough decisions like blocking Afghan trade, building wall on Pak Afghan border, creating a buffer zone of friendly Afghan forces within Afghanistan adjacent to Pak Afghan border.

Such actions have been taken successfully by China, Israel & India in the past history and being exercised by leaders like Trump against Mexico and by Tayyip Erdogan against Syria. Pakistan must come out of a passive and weak diplomatic policy since last 70 years. Pakistan must finally learn that a bull is best handled by ” Taking the Bull by the Horns” after patting the bull failed miserably.

Those opposing such actions against Afghanistan with myths may deliberate, how such policy worked for others? Why it will not work for us? finding Answers to these questions will help in creating clarity.

70 years of disastrous relationship with Afghanistan which almost brought Pakistan to the verge of collapse needs solutions not myths.

Blaming ourselves, our military, our leadership, our ISI can be a debate but useless debate unless debate is made to find solutions. We have to learn lessons from others as well as from our mistakes to improve our institutions.

Latest lesson we might learn from Turkey which came hard on terrorist right in the middle of Syria. Not only that, they occupied Syrian area, they placed friendly Syrian forces to create buffer zone between Syria and Turkey.

Similar strategy was adopted successfully by Iran in case of Afghanistan as Iran-Afghanistan border is well buffered with pro Iranian Afghan forces. This is something like a tested strategy against Afghanistan’s unstable rule over decades.

Trump was also discouraged from building wall with Mexico with many myths but he remained determined and wall construction is starting very soon. Myths were broken here with strong will and leadership.

From our own history, Ghazwa Khundaq is a classic example how we can defend ourselves from outside threats.

Our traditional minds are stuck with myths which eventually break down right in front of us. FATA was a myth without Military or Police presence for centuries, myth came down shattering today with Military building cantonments, Cadet College, hospitals and APS School in FATA while FATA soon becoming part of KPK with similar law of land like rest of the country. It took a century to break this myth.

Strong will and clarity help us to see world beyond myths and perception. Unfortunately neither leadership nor nation could find the courage to break myth on Afghanistan.

We honestly need a Trump to help our defeating attitudes.