PSL Final. Dear Imran Khan “Don’t you know, you should not blow horns, nation is sleeping”.

807

 

Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ”Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/ and can be contacted at “pakistan.bth@gmail.com”


فائنل PSL

جناب عمران خان ہارن  نہ بجائیں کیا آپ کو معلوم نہیں کہ قوم سو رہی ہے

احمد جواد 

کئی اطراف سے عمران خان پر  تنقید ہو رہی ہے کہ انہوں نے لاہور میں پی ایس ایل فائنل کرانے کی مخالفت کیوں کی۔بلکہ انہیں تو اس کی حمائت کرنی چاہئے تھی اور بین الاقوامی کرکٹ کو فروغ دینے کے لئے اس میں شرکت کرنی چاہئے تھی۔

میرے خیال میں عمران خان کے نقطہ نظر کو ٹھیک طرح سمجھا نہیں گیا۔”کرکٹ سے امن بحال نہیں ہوسکتا “کہنے سے ان کی مراد یہ تھی کہ امن سے ہی کرکٹ کو واپس لایا جا سکتا ہے۔بکتر بند گاڑیوں، سینکڑوں چیک پوسٹیں قائم کرنے، ہزاروں پولیس والوں کی تعیناتی اور توپوں کے سائے میں چند بین الاقوامی کھلاڑیوں کی موجودگی میں ایک بودا سا میچ کروا دینے سے پاکستان کے پر امن ہونے کا پیغام نہیں دیا جا سکتا۔جہاں تک دہشت گردی کے سائے  میں اور پر خطر حالات میں میچ کرانے کا تعلق ہے مجھے یہ احساس ہوا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کےاوقات اور مقامات سے شریف خاندان کے مفادات کو کبھی ضعف نہیں پہنچا۔دہشت گردی کا ارتکاب ہمیشہ بین الاقوامی حالات  اور فوج کو زک پہنچانے کے لئے کیا گیا۔اس لئے پی ایس ایل کے فائنل میچ میں دہشت گردی کا رتی بھر امکان نہیں تھا کیونکہ یہ شریف خاندان کے لئے بہت بڑا خطرہ ہوتی۔

لاہورکے اس جشن کو بپا کرنے کی ایک اور دلیل یہ دی جاتی ہے کہ اس کا مقصد قومی یکجہتی اور تفریح کی فراہمی تھا۔قومی اتحاد اورتفریح ایک دن کا نہیں بلکہ سال ہا سال کا معاملہ ہے جسے دکھاوے کی ایک دو تقریبات سے فارغ کر دینا ممکن نہیں۔قوم کو تفریح فراہم کرنے کے ہمیں پارک اور کھیلوں کی سہولتیں بہم پہنچانے کی ضرورت ہے۔قوم کو متحد کرنے کے لئے انصاف کی فراہمی  اشد ضروری ہے کیونکہ انصاف سے محروم معاشرے کی جڑیں دور تک  پھیلی ہوتی ہیں۔کرپشن کے خلاف لڑنے والا عمران، لوگوں کے ان کے حقوق یاد کرنے والا، اصولوں پر سمجھوتہ نہ کرنے والا، تلخ حقائق بتانے والا، سادہ غذا کھانے والا، یونیورسٹی اور ہسپتال تعمیر کرنے والا، اداروں کے قیام کی بات کرنے والا اور حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کرنے والا عمران غلط ہی لگتا ہے۔وہ ایسی غلط جگہ کھڑا ہے جہاں لوگوں کا مشغلہ گہری نیند کا مزہ لینا ہے۔قوم  خوابوں کی جنت میں سی پیک، پی ایس ایل، میٹرو اور اورنج ٹرین  کے سپنے دیکھتے دیکھتے عمران کا شور سنتے ہی ہڑ بڑا  کرپریشان ہو جاتی ہے۔جناب عمران خان صاحب کیا آپ کو معلوم نہیں کہ آپ کو ہارن نہیں بجانا چاہئے کیونکہ قوم سو رہی ہے؟


 PSL Final. Dear Imran Khan “Don’t you know, you should not blow horns, nation is sleeping”.

By Ahmad Jawad

There is a lot of criticism from some corners that why Imran criticised PSL Final in Lahore and he should have supported and participated to promote International Cricket.

I think Imran Khan point of view has not been understood correctly. What he basically meant that Cricket cannot bring Peace, but Peace can bring Cricket. Holding one odd match with few international players in the cover of Guns, soldiers, armoured vehicles, thousands of police, hundreds of check posts and blocking routes will not give the message of peaceful Pakistan. As far as holding match in a risky current environment under the terror threat is concerned, I have observed that location and timing of terror attacks in Pakistan rarely damages Sharifs interests, it is timed and placed to damage Army or critical International timings. Therefore, terror attack in PSL Final was a remote possibility as it would have been disastrous for Sharifs.

Giving entertainment and creating unity among Pakistanis was another reason given to justify Lahore event. Neither unity nor entertainment is a one day affair, it is meant to last throughout the years not by just show casing one or two events. We need to build sports facilities and public parks to entertain our public, we need to provide justice to have unity. An unjust society can never have unity, it has deep drawn lines.

Imran Khan is always wrong by fighting against corruption, by talking about people’s rights, by not compromising on principles, by telling bitter realities, by eating simple food, by building Hospitals and University, by talking about making institutions, by playing genuine role of opposition. He is at a wrong place, he is at a place, where deep sleep is best habit. Nation too often get disturbed by his noise just when nation is seeing dreams of entering into heavens through CPEC, PSL, Metro or Orange. Dear Imran Khan ” Don’t you know, you should not blow horns, nation is sleeping”.