Railway Station – A modern concept to serve as hub of commercial activities.

1600

By Ahmad Jawad


Writer is Chief Visionary Officer of World’s First Smart Thinking Tank ” Beyond The Horizon” and most diverse professional of Pakistan. See writer’s profile at http://beyondthehorizon.com.pk/about/


 

British Empire established Railway Stations at major cities of Pakistan region at Karachi, Lahore, Peshawar, Quetta & Rawalpindi, after 69 years, same stations are being used. On the other hand, world shifted to new & modern concept of Railway Stations which are hub of all commercial activities in the city. See Grand Central Station of Birmingham. Every brand & shop can be found here. Prices have been aimed to allow common man to enjoy facilities of Station. Revenue generation from such a project for Government is additional advantage of such projects. Such projects are built with the combination of public private partnership. Vision of our rulers does not go beyond taking loans from IMF & donors to invest into expensive projects which are never viable as self generating projects.


ریلوے اسٹیشنوں کا جدید تصور

احمد جواد

سلطنت برطانیہ نے پاکستانی علاقے میں واقع بڑے شہروں کراچی ، لاہور، پشاور، کوئٹہ اور راولپنڈی میں ریلوے اسٹیشن بنائے۔ آج 69سال  بعد بھی وہی اسٹیشن استعمال کئے جا رہے ہیں۔ مگر دنیا میں جدید ریلوے اسٹیشنوں کا تصور بدل چکا ہے۔ اب ہو شہر میں تجارتی سرگرمیوں کا محور بن چکے ہیں۔ برمنگھم کے بڑے مرکزی اسٹیشن کو ہی لے لیجئے وہاں آپ کو ہر برانڈ کی دوکان مل جائے گی۔ قیمتیں اس اندا ز سے متعین کی گئی ہیں کہ اسٹیشن پر موجود تمام سہولیات سے عام آدمی بھی مستفید ہو سکے۔ اس طرح کے منصوبوں سے حکومت کو ملنے والی آمدنی اضافی فائدہ تصور کی جاتی ہے۔ یہ منصوبے نجی اور سرکاری شراکت سے بنائے جاتے ہیں۔ ہمارے حکمرانوں کا مطمع نظر فقط آئی ایم ایف اور دوسرے اداروں سے قرض لینا اور ان رقوم کو نا قابل عمل مہنگے منصوبوں پر خرچ کرنا ہوتا ہے جو اپنے ذرائع آمدن پیدا کرنے سے قاصر ہوتے ہیں۔